اویغور رہنما سمیت 29 ممتاز شخصیات کیلیے چین کا اعلیٰ ترین ’یکم جولائی میڈل‘

0 168

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

بیجنگ: 

چینی کمیونسٹ پارٹی (سی پی سی) کے قیام کی 100 ویں سالگرہ کے موقع پر چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کی جانب سے پہلی مرتبہ اعلیٰ ترین اعزاز ’’یکم جولائی میڈلز‘‘ دینے کی تقریب آج 29 جون کی صبح بیجنگ کے عظیم عوامی ہال میں منعقد ہوئی۔

اس موقع پر مختلف شعبہ جات میں اہم خدمات سرانجام دینے والے پارٹی کارکنوں کو سی پی سی کے جنرل سیکرٹری اور چینی صدر شی جن پھنگ نے ’’یکم جولائی میڈل‘‘ سے نوازا اور اہم خطاب بھی کیا۔

واضح رہے کہ ’’یکم جولائی میڈل‘‘کا مقصد چینی کمیونسٹ پارٹی کے اُن کارکنوں کی خدمات کا اعتراف ہے جنہوں نے مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

اس سال یہ میڈل حاصل کرنے والوں کی تعداد 29 ہے جو سائنس، سماجی خدمات، دفاع، فنونِ لطیفہ، تعلیم اور قومی یکجہتی سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھتے ہیں۔ ان میں سے 26 میڈل یافتگان حیات ہیں جبکہ 3 فوت ہوچکے ہیں۔

چین میں لڑکیوں کےلیے پہلا مفت اسکول قائم کرنے والی ژانگ گوئمی اور سنکیانگ میں مذہبی شدت پسندی کے خلاف برسرِ پیکار ممتاز اویغور رہنما ممتجان وُومر بھی یہ میڈل حاصل کرنے والوں میں شامل ہیں جو خصوصی پروٹوکول کے ساتھ بیجنگ کے عوامی ہال پہنچے، جہاں آج یکم جولائی میڈلز کی تقریب منعقد ہوئی۔

صدر شی جن پھنگ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’یکم جولائی میڈل‘‘ انعام یافتگان کی کارکردگی سے سی پی سی کے پختہ عزم، مقاصد کی تکمیل کےلیے جدوجہد، صاف و شفاف سیاست اور بہترین خدمات فراہم کرنے جیسی بہترین اقدار کی عکاسی ہوتی ہے۔

انہوں نے پارٹی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ مارکسزم اور چینی خصوصیات کے حامل سوشلزم کی راہ پر ایمانداری سے قائم رہیں۔ چینی کمیونسٹوں کو ہمیشہ عوام کے ساتھ رابطے کو مضبوط رکھنا چاہیے، عوام کی آواز سننی چاہیے اور عوامی حقوق کے تحفظ کےلیے جدوجہد کرنی چاہیے۔ انہوں نے زور دیا کہ چینی کمیونسٹ پارٹی کے تمام اراکین کو اعلیٰ حوصلے، محنت اور لگن سے کام کرنے کے جذبے کو برقرار رکھنا چاہیے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.