ڈیرہ مراد جمالی میں پینے كا پانی ناپید، شہری بوند بوند كو ترسنے لگے

0 86

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

ڈیرہ مراد جمالی میں پینے كا صاف پانی ناپید ہوگیا جس سے لوگ پانی كی بوند بوند كو ترسنے لگے۔

متحدہ قومی موومنٹ پاكستان كے صوبائی سینئرنائب صدرامداد حسین مری نے صحافیوں سے بات كرتے ہوئے كہا کہ  محکمہ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ (پی ایچ ای) شہریوں كو پانی كی فراہمی میں ناكام رہی لوگ ٹینكرز كے ذریعے مہنگے داموں پانی خریدنے پر مجبور ہو كر رہ گئے ہیں، اگر عوام كو پینے كا صاف پانی فراہم نہ كیا گیا تو متحدہ قومی مومنٹ پاكستان پی ایچ ای آفس كا گھیراؤ كر كے سخت سے سخت احتجاج کرے گی۔

امداد حسین مری نے کہا کہ ایكسین پی ایچ ای كی ناقص پالیسیوں  كے سبب پی ایچ ای كا نظام درہم برہم ہو چكا ہے ایكسین پی ایچ ای كی جانب سے شرقی و غربی كے مختلف علاقوں میں پینے كا پانی نا پید ہو چكا ہے جس كے باعث اہل علاقہ كے مكینوں میں شدید گرمی كے موسم میں انہیں سخت تكلیف و مشكلات كا سامنا كرنا پڑھ رہا ہے اور لوگ ٹینكرز كے ذریعے پانی خریدنے پر مجبور ہو چكے ہیں  محكمہ پی ایچ ای كے افسران فوٹو سیشن اور اخباری بیانات كے ذریعے اپنی كاركردگی ظاہر كر كے عوام كے ساتھ سنگین مذاق کر رہے ہیں۔

انہوں نے كہاكہ ستمبر كے مہینے میں  بھی ڈیرہ مراد جمالی كے علاقے كلرک كالونی، انڈسٹریل ایریا سمیت شرقی اور غربی كے مختلف محلہ جات میں پینے كے پانی كی قلت پیداہوگئی ہے، علاقہ مكین سراپا احتجاج بن گئے محكمہ پبلك ہیلتھ اینڈ انجینئر نگ كی ناقص حكمت عملی كے باعث ڈیرہ مراد جمالی كے متعدد محلوں میں  پانی كی شدید قلت ہے، گزشتہ 20 دنوں سے پانی كی قلت كا سامنا ہے، صاف پانی كی فراہمی محكمہ پی ایچ ای كی ذمہ داری ہے۔

علاقہ مكینوں كے مطابق بچا كچا پانی عملے كی جانب سے مقامی فیكٹریز مالكان كو مہنگے داموں  بیچا جارہا ہے، چیف سیكریٹری بلوچستان كمشنر نصیرآباد ڈویژن، ڈپٹی كمشنر نصیرآباد سے نوٹس لینے كی اپیل كی ہے تا كہ ڈیرہ مرادجمالی میں پینے كے پانی كی فراہمی ممكن ہوسكے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.