کئی سالوں کے بعد آنیوالا بلدیاتی نظام کونسلران کیلئے مشکل ہوگا نواب جام کمال خان

0 83

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اوتھل:سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب جام کمال خان نے کہا ہے کہ کئی سالوں کے بعد آنیوالا بلدیاتی نظام کونسلران کیلئے مشکل ہوگا جدید دور ہے مواصلاتی نظام کافی تیز ہے ہر ایک کونسلر تک پہنچ جائے گا اور کونسلران کیلئے سیلاب زیادہ مسائل چھوڑ کر گیا ہے عوام کمزور ہوچکی ہے ملکی سطح اور صوبائی سطح پر حالات کچھ اور ہوچکے ہیں سیلاب کے بعد صوبائی سطح پر فنڈز کی بھی کمی ہے اور حکومت کو چاہیے کہ وہ بلدیاتی نظام کو زیادہ فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنائے تو کونسلران مسائل زیادہ حل کریں گے بغیر مقابلے سے آنیوالوں پر راضی نہیں ہوں کہ جو محنت کرکے آئے گا تو عوام کی خدمت بھی زیادہ کرے گا جس کو بغیر محنت کے سیٹ ملے گی تو توجہ بھی کم دیگا انشا ء اللہ ایک کمیٹی بنا کر جہاں جہاں پر مقابلے ہورہے ہیں وہاں پر اپنے پینل کا ایک مضبوط امیدوار کھڑا کیا جائے گا دو دو یا تین تین ہمارے ہی گروپ کے امیدواران آپس میں لڑیں گے تو فائدہ مخالف گروپ کو ہوگا خود کو لسبیلہ کے وفادار خدمت کے دعویدار سمجھنے والے سیلاب میں کہاں تھے ہم ترقی کے مخالف نہیں ماضی میں بھی عوام کے ہی مسائل حل کیئے ہیں اور مستقبل میں بھی کریں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کے روز سابق چیئرمین اوتھل سردار رسول بخش برہ کی رہائش گاہ پر بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے منقعدہ میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا سابق وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا کہ سیلاب کے بعد آج پہلی سیاسی میٹنگ سے خطاب کررہا ہوں اور سیلاب کے دوران جن لوگوں نے متاثرین کی خدمت کی ہے ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں اور سیلاب کے دوران ہم مسلسل عوام کے درمیان موجود رہے اور ہم سے اور ہمارے لوگوں سے جو کچھ ہوسکا وہ متاثرین کیلئے کیا انہوں نے کہا کہ اگر لوگ غمی و خوشی کی شرکت کو بھی سیاسی سمجھتے ہیں تو اس غمی و خوشی کو بھی سیاست کا حصہ بنایا جائے سیاست کا بھی ایک دارومدار اصولوں پر ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ الحمد اللہ ہمیشہ صاف و ستھری سیاست پر یقین رکھا ہے اور جھوٹ و دھوکے کی سیاست نہ کی ہے اور نہ ہی کریں گے ہمیشہ سچائی پر مبنی سیاست کو فروغ دیا ہے سچ سچ ہی ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ لسبیلہ کیلئے درد رکھنے والے اور خدمت کے دعویدار سیلاب کے دوران دور دور تک نظر نہیں آرہے تھے موسم میں آنے والے بٹیر پھر اپنی جگہ لینے کی کوشش کریں گے لیکن جس کی محنت پسند آئے اس کو ووٹ دیں دیکھنے والی تصویر کچھ اور ہے اور کتاب کے اندر کچھ اور ہے ترقی کا صرف نعرہ لگانا ہی کافی نہیں ہے بلکہ عملی کام ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے ہمارے لوگوں نے کافی محنت کی ہے اور مزید کررہے ہیں اور آپس میں اتفاق سے رہ کر ایک طریقہ بنائیں جہاں پر ہمارے پینل میں جس کی پوزیشن مضبوط اس کو ہی میدان میں مقابلے کیلئے رہنے دیں میں بھی بغیر مقابلے سے آنیوالوں میں راضی نہیں ہوں کیوں کہ مقابلہ کرکے آئیں گے تو عوام کی خدمت زیادہ کریں گے بلدیاتی الیکشن میں دو ہفتے باقی رہ گئے ہیں اور مزید فیصلے بھی کئے جائیں گے پسند نا پسند نہیں ہوگا جس کی پوزیشن مضبوط ہوگی اسکو ہی مقابلے کا موقع دیا جائے کوشش کریں اچھے نمائندوں کو منتخب کریں تاکہ وہ علاقائی مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنے کی پوری کوشش کریں انہوں نے کہا کہ اس وقت ملکی سطح و صوبائی سطح پر حالات تبدیل ہیں اور سیلاب کے بعد فنڈز کی کمی ہے لیکن حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ آنیوالے بلدیاتی سیٹ اپ کو زیادہ فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنائیں اور انہیں زیادہ اختیارات دیئے جائیں تاکہ منتخب کونسلران عوام کی زیادہ سے زیادہ خدمت کرسکے کیوں کہ سیلاب کے بعد عوام کافی کمزور ہے زمینداری تباہ ہے لوگ پریشان ہیں اور یہ سب کونسلران کیلئے بھی آزمائش ہوگی عوام کے مسائل کو حل کرنے کا سب سے بڑا مرکز بلدیات ہے نچلی سطح کے اقتدار سے علاقے میں واضح تبدیلی آتی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.