ٹی آئی کے لانگ مارچ کو بلوچستان میں سیکورٹی دیں گے غیرملکیوں کی سیکورٹی کے لئے اسپیشل یونٹ بنایا جارہا ہے میرضیاء اللہ لانگو

0 106

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ : مشیر داخلہ بلوچستان میرضیاء اللہ لانگو نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے لانگ مارچ کو بلوچستان میں سیکورٹی دیں گے غیرملکیوں کی سیکورٹی کے لئے اسپیشل یونٹ بنایا جارہا ہے

ناراض بلوچ رہنمائوں سے آئین کے دائرے میں رہتے ہوئے مذاکرات کئے جارہے ہیں ہم پرامید ہیں کہ بہت جلد بہت سے رہنماء واپس آجائیں گے دہشت گردی میں ملوث عناصر کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے صوبہ میں دہشت گردی میں افغانستان کی سرزمین استعمال ہورہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو بلوچستان اسمبلی کے احاطے میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا میر ضیاء اللہ لانگو نے کہا کہ آئین اور قانون کے تحت ہر شہری کو احتجاج کرنے کا جمہوری حق ہے لیکن ادروں کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے کی اجازات نہیں دیں گے تحریک انصاف کے لانگ مارچ کو بلوچستان میں سیکورٹی دیں گے سیکورٹی کیلئے ہم سے رابطہ نہیں کیاگیا لیکن ہم سیکورٹی کوممکن بنائیں گے کیونکہ لانگ مارچ کو تھریٹس ہیں بلوچستان میں ویسے ہی حالات بہتر نہیںگزشتہ ایک ہفتے سے کوئٹہ میں ناخوشگوار واقعات پیش آئے ہیں جس طرح پولیو ورکرز کی سیکیورٹی پر تعینات لیویز اہلکاروں کو شہید کیا گیامیں کوئٹہ نہیں تھا واپس آتے ہی اس کا نوٹس لیا ہے اور دہشت گردی کے واقعات میں ملوث عناصر کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے ان واقعات میں پاکستان تحریک طالبان ملوث ہے اور ٹی ٹی پی کو بھارت استعمال کررہا ہے ٹی ٹی پی کے دہشت گرد افغانستان کی سر زمین استعمال کرکے بلوچستان میں حالات کا خراب کرنا چاہتے ہیں حالانکہ ہمیں افغانستان میں طالبان کے آنے سے امید تھی کہ افغان سر زمین پاکستان کے خلاف استعمال نہیں ہوگی انہوں نے کہا کہ ارشد شریف نہایت قابل صحافی تھے عمران خان اداروں کے خلاف بیان دے کر ملک دشمنی کر رہے ہیںباہر بیٹھے بلوچ رہنماں سے رابطے میں ہیں امید ہے مذکرات میں چندرہنماء پاکستان واپس آجائیںگے ناراض بلوچ رہنمائوں سے مذاکرات آئین کے دائرے میں رہتے ہوئے کئے جارہے ہیںغیر ملکیوں کی سیکورٹی کیلئے اسپیشل یونٹ بنانے کا فیصلہ ہوا ہے اس حوالے سے محکمہ داخلہ کی ٹیم بیٹھے گی اور چیزوں کا جائزہ لے گی غیرملکیوں کی سیکورٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا کیونکہ بلوچستان آنیوالے غیر ملکیوں کی ذمہ داری اور ان کا تحفظ ہمارا فرض ہے باہر بیٹھے لوگوں کو پاکستان میں خون بہانے نہیں دیں گے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہرنائی میں پیش آنے والے واقعہ کے حوالے سے ہم نے متاثرہ خاندان کیساتھ ملاقات کرکے ان کے مطالبات تسلیم کرکے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے علاقہ میں امن امان کی بحالی کے لئے سیکورٹی فورسز کا ہونا انتہائی ضروری ہے شہر میں چیک پوسٹوں کے حوالے سے کمشنرکی سربراہی میں کمیٹی کام کررہی ہے جسمیںڈی آئی جی سبی اورڈپٹی کمشنرسمیت دیگر حکام شامل ہیں وہ جو سفارشات دیں گے ہم ان کا جائزہ لیکراقدامات اٹھائیں گے ۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.