بلوچستان فوڈ اتھارٹی کی جانب سے سیوریج کے زہریلے پانی سے سبزیوں کی کاشت کے خلاف کاروائیوں کا آغاز

0 94

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ : بلوچستان فوڈ اتھارٹی کی سیوریج کے زہریلے پانی سے سبزیوں کی کاشت کے خلاف دوبارہ کاروائیوں کا آغاز کردیا گیا،نیو سبزل روڈ میں وسیع اراضی پر اگائی گئیں گوبھی، دھنیا،پودینہ، پیاز اور سلاد کی فصلیں ٹریکٹر چلاکر تلف جبکہ متعدد مقامات پر فصلوں کو گندے پانی کی سپلائی روکنے کے لیے نالوں سے پانی کی فراہمی کے ذرائع بھی منقطع کر دئیے گئے.عمران ٹاؤن اور عبداللہ ٹاؤن میں کارروائی ڈائریکٹر آپریشنز غلام مرتضیٰ کی سربراہی و ضلعی انتظامیہ کے ہمراہ کی گئی۔ ڈی جی بلوچستان فوڈ اتھارٹی ابراہیم بلوچ کا اس ضمن میں کہنا ہے کہ زہریلے پانی کاشت کردہ مضر صحت سبزیاں غذائیت کے بجائے مختلف بیماریوں کا سبب بن رہی ہیں۔بی ایف اے گندے پانی سے مضر صحت سبزیوں کی کاشت کے مکمل خاتمے تک آپریشنز جاری رکھے گی جبکہ کارروائیوں کے دوران مزاحمت پر ملوث کاشتکاروں و زمینداروں کیخلاف مقدمات بھی درج کروائے جائیں گے۔ واضح رہے کہ عدالت عالیہ بلوچستان کے فیصلے و بی ایف اے کی جانب سے بارہا تنبیہ و نوٹسز کے باوجود سیوریج کے پانی سے سبزیاں کاشت کی جارہی ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.