عمران خان ملک کو تباہی کے دہانے پر چھوڑ گئے،خواجہ آصف

0 102

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

پی ٹی آئی حکومت کی پیدا کردہ مشکلات کے سبب پیٹرولیم قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا ورنہ ملک دیوالیہ ہو جاتا ، عمران خان اداروں کے خلاف بات کرتے ہیں اپنی کارکردگی پر نہیں، وزیر دفاع
عمران خان ہمارے ہاتھ باندھ کرگیاوہ ہاتھ بھی چھڑوانے ہیںملک کو بھی صیح سمت میں لانا ہے،اسعد محمود
عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کاسیاسی فیصلہ کیا، مصدق ملک و دیگر کی مشترکہ پریس کانفرنس

اسلام آباد:حکومتی وزراء نے پٹرولیم منصوعات کی قیمتوں میں اضافے پر پی ٹی آئی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا
گزشتہ چار سال کی برائی قدم قدم پر ہمارے سامنے رکاوٹ بنی ہوئی ہے، عمران خان ملک کو تباہی کے دہانے پر چھوڑ گئے،معیشت ہمیں کھنڈرات کی حالت میں ملی، ہمارے لیے مشکل تھا کہ الیکشن کرائیں یا معیشت کو بچائیں، عمران خان اداروں کے خلاف بات کرتے ہیں اپنی کارکردگی پر بات نہیں کرتے، پی ٹی آئی حکومت کی پیدا کردہ مشکلات کے سبب تیسری دفعہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا ، بین الاقوامی سیاست کی کراس فائر میں آگئے ہیں،شاید ایٹمی قوت ہی ہمیں بچارہی ہے ۔عمران خان ہمارے ہاتھ باندھ کرگیاوہ ہاتھ بھی چھڑوانے ہیں ،ملک کوصحیح سمت میں بھی لاناہے۔ جمعرات کو اسلام آباد میں وفاقی وزراء کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا کہ چار سال کی برائی قدم قدم پر ہمارے سامنے رکاوٹ بنی ہوئی ہے کیونکہ پی ٹی آئی کی حکومت نے ایسی مشکلات پیدا کردیں کہ کل رات تیسری دفعہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا۔اسلام آباد میں قمر زمان کائرہ اور مولانا اسعد محمود کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے ایسی مشکلات پیدا کردیں کہ کل رات تیسری دفعہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا، معیشت ہمیں کھنڈرات کی حالت میں ملی، ہمارے لیے مشکل تھا کہ الیکشن کرائیں یا معیشت کو بچائیں۔ انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کی شرائط پی ٹی آئی حکومت نے طے کیں، ان شرائط کو پورا کرنے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں تھا۔وزیر دفاع کا کہنا تھاکہ دنیا میں کہیں بھی مارکیٹیں رات ایک بجے تک کھلی نہیں رہتیں، ساری دنیا میں 6 ساڑھے 6 بجے مارکیٹیں بند ہوتی ہیں، مارکیٹیں جلدی بند ہوجائیں تو بجلی کی بچت کے باعث تیل کی بچت ہوسکتی ہے، ہمارے تاجر ابھی اس تجویز کو قبول کرنے کو تیار نہیں ہیں، ہاتھ جوڑکر استدعا ہے کہ کفایت شعاری کی طرف جائیں، جب وسائل کم ہوتے ہیں تو خاندان بھی اپنے اخراجات تبدیل کرتے ہیں، یہ اس وقت ضرورت ہے اور یہ ہمارے کلچر کا حصہ بننا چاہیے۔پوری دنیا میں کہیں بھی رات ایک بجے کاروبار نہیں ہو تا ، کفایت شعاری وقت کی اہم ضرورت ہے اور اب یہ ہماری کلچر کا حصہ ہو جانی چاہیے ملک کو معاشی بحران سے نکالنے کیلئے ہم سب کو ملکر کام کرنا ہو گا ۔انہوں نے مزید کہا کہ تیل و گیس کی وجہ سے عام آدمی پر کیا اثر ہورہا ہے، جو کھاتے پیتے لوگ ہیں وہ ہوسکتا ہے سوچ بھی نہ سکتے ہوں کہ عام لوگ کس تکلیف سے گزرہے ہیں، ہوسکتا ہے اسلام آباد میں مہنگائی کا احساس نہ ہو لیکن عام گلی محلے میں جائیں تو ان کی زندگی بہت مشکل ہوگئی ہے۔خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ اس تمام صورتحال کی ذمہ داری ہم اٹھائیں گے کہ مہنگائی کم ہو اور عام آدمی کی مشکلات میں اضافہ کم ہو، یہ ضرور ہوگا،منافع خوری کیلئے پٹرول کی قلت پیدا کی جاتی ہے، مہنگائی پوری دنیا کا مسئلہ ہے صرف ہمارا نہیں ۔ اگر روس یوکرین کی جنگ بند ہو تو تیل کی قیمت کم ہوگی، روس یوکرین تنازع کی وجہ سے پٹرولیم منصوعات ،اناج ، گندم سمیت دیگر چیزوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ، جنگ کی وجہ 30فیصد چیزیں دنیا سے غائب ہو گئیں ۔ہم بین الاقوامی سیاست کی کراس فائر میں آگئے ہیں۔ ہم ایک ایٹمی قوت ہیں اور شاید ایٹمی قوت ہی ہمیں بچارہی ہے۔ عمران خان دور حکومت میں ریکارڈ قرضے لیئے گئے عمران خان ہمیشہ اداروں کے خلاف بات کرتے ہیں کہتے ہیں کہ میرے خلاف سازش ہو گئی ہے لیکن وہ کبھی اپنی کارکردگی پر بات نہیں کرتے چار سال کی برائی قدم قدم پر ہمارے سامنے رکاوٹ بنی ہوئی ہے۔عمران خان ملک کو تباہی کے دہانے پر چھوڑ گئے وہ کہتے ہیں کہ مجھے اقتدار دو نہیں تو فوج بھی تباہ ادارے بھی تباہ،اور خدانخواستہ ملک بھی تباہ ہے عمران خان کا رونا صرف یہ ہے کہ مجھے اقتدار سے کیوں نکالا آئی ایم ایف کی شرائط پی ٹی آئی حکومت نے پوری کیں، مشیر وزیراعظم قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ اگرپٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھاتے توملک ڈیفالٹ کی طرف چلاجاتا، حقائق عوام کے سامنے ہیں، ہمارے پاس دوسراکوئی راستہ نہ تھا۔ گزشتہ حکومت نے آئی ایم ایف کیساتھ کمزورمعاہدہ کیا۔ وفاقی وزیر اسعد محمود نے کہا کہ یہ معروضی اورہنگامی حالات ہیں،بوجھل دل کیساتھ آپ کے سامنے بیٹھے ہیں۔ ہمارے پاس آسان
حل تھا انتخابات میں جاتے اور نیا مینڈیٹ لیکر آتے، حکومت موجودہ حالات میں ہنگامی بنیادوں پرفیصلے کررہی ہے، یقین ہے کہ ہم درپیش چیلنجزسے نکل کرآئیں گے، جن چیزوں میں عمران خان ہمارے ہاتھ باندھ کرگیاوہ ہاتھ بھی چھڑوانے ہیں اورملک کوصحیح سمت میں لاناہے۔وزیر مملکت مصدق ملک نے کہا کہ عمران خان جاتے ہوئے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے بلکہ کم کرنیکااعلان کرکے گئے،انہوں نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کاسیاسی فیصلہ کیا، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھاکرخزانے پربوجھ ڈالاگیا۔ عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات پر جو سبسڈی دی اس کافیصلہ کابینہ میں نہیں ہواتھا

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.