عمران خان ملک میں لانگ مارچ کے نام پر فساد پھیلاریے ہیں فاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی آغا حسن بلوچ

0 145

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ: کوئٹہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی اور بلوچستان نیشنل پارٹی کے رہنما آغا حسن بلوچ کا کہنا تھا کہ احتجاج کرنا ہر ایک کا جموری حق ہے لیکن ۔عمران خان ملک میں لانگ مارچ کے نام پر فساد پھیلاریے ہیں اورلوگوں کے جذبات سے کھیل رہے ہیں عمران خان جنرل الیکشن کا انتظار کریں انکے پر ہونے والے حملے کی تحقیقات کرانے کیلئے سپریم کورٹ کے حکم پر ایف آئی آر درج ہوگئی ہے سیاسی لوگ اور جماععتین ہمشہ اپنی بات مذاکرات کے زریعے حل کرنے کی کوشش کرتے ہیں عمران خان کا اداروں اور سیاسی رہنماں کو ہدف تنقید بنانا ملک کے مفاد میں نہیں ہے راستے بند کرنے کی بجائے اپنی بات جموری انداز میں حکومت کے سامنے رکھیں لانگ مارچ اور احتجاج تحریک انصاف کا حق ہے لیکن اس کیلئے منظم طریقہ کار ہونا چاہئے قنل ازریں انہوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان کے دس اسکولوں کو جدید تعلیمی سہولیات کی فراہمی کیلئے پاکستان سائنس فانڈیشن کے تعاون سے سٹمپ لاچنگ تقریب کا انعقاد کیا جارہا ہے بلوچستان میں فلیب لیپ کا قیام خوش آئند ہے مخلتف اسکولز کو سہولیات کے فقدان کا سامنا ہے دور افتادہ علاقوں میں سائنسی عمل عام کرنے کا عزم ہے بلوچستان میں جدید تعلیم کا فروغ حکومت کا پختہ عزم ہے سریاب جلد انشااللہ تعلیم اور بنیادی ڈھانچے کے لحاظ سے مثالی علاقہ بنے گا بنے گا پڑھا لکھے بلوچستان کیلئے سائنس کاروان موبائل ٹیم کو ہر جگہ رسائی دی جارہی یے اور تمام علاقوں موبائل سائنس لیپ پہنچے گی صوبائی دارلحکومت کے تمام اسکولز میں مرحکہ وار سٹمپ لیپ کا قیام عمل میں لایا جائے گا تقریب سے پاکستان سائنس فانڈیشن کے چیرمین شاھد محمود بیگ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فیپلیب سائنس کے تصور کو عملی شکل دیتا ہے ملک بھر میں پچاس سٹمپ اسکول قائم کئے جارہے ہیں ہر صوبے میں دس اسکول بنائے جارہے ہیں کوئٹہ میں دو اسکولز میں فیب لیپ کا افتتاح ہوچکا یے نواب غوث بخش رئیسانی گرلز ماڈل اسکول کا انتخاب میرٹ پر کیا گیا ۔سائس فائڈیشن پانچ اساتذہ کو تربیت بھی فراہم کرے گی اسٹمپ اسکولز نصاب کو جدید کرنے کیلئے کردار ادا کرینگے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری تعلیم عبدلروف بلوچ نے کہا کہ بلوچستان ملک کا 44 فیصد ہے منتشر آبادی کیلئے تعلیم تک رسائی اور سیکھنے کا عمل ایک بڑا چیلنج یے سائنس کے ماہر استاتذہ کی کمی ہے سائنس سیوابستہ علوم کی فراہمی تمام اضلاع تک کی جائے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
Leave A Reply

Your email address will not be published.